کراچی،بلدیہ ٹاون میں14گھنٹے کی لوڈ شیڈنگ،مکینوں کا احتجاج



کراچی کے علاقے بلدیہ ٹاون میں  بجلی کی یومیہ چودہ گھنٹے اعلانیہ اور غیر علانیہ لوڈ شیڈنگ نے مکینوں کی زندگی اجیرن کر دی۔ علاقہ مکینوں کی بڑی تعداد بجلی کی بندش کے خلاف آئی بی سی بلدیہ کے دفتر کے باہر جمع ہو گئی اور پرامن احتجاج کیا۔ مظاہرے میں مسلم لیگ نون، جماعت اسلامی اور عوامی نیشنل پارٹی کے مقامی قائدین بھی شریک ہوئے۔

 اس موقع پر مظاہرین نے کے الیکٹرک کے خلاف شدید نعرے بازی کی۔ مسلم لیگ نون پی ایس 115کےصدر سلمان خان، پی ایس 116 کے صدر طارق علی خان اور نواز اعوان نے کہا کہ اگر72 گھنٹوں میں غیرعلامیہ لوڈ شیڈنگ کا سلسلہ ختم نہ کیا گیا تو احتجاج کا دائرہ وسیع کردیا جائے گا۔

  لیگی  رہنما سلمان خان کا کہنا تھا کہ بجلی کی طویل بندش کے علاوہ اووربلنگ سے بھی لوگ  پریشان ہیں، اگر کے الیکٹرک حکام نے توجہ نہ دی تو بروز  پیر آل بلدیہ پولیٹیکل الائنس کے تحت آئی بی سی کا گھیراؤ کرکے بڑا مظاہرہ  ہوگا۔ انہوں نے کہا کے الیکٹرک کی  من مانیوں کے آگے سندھ حکومت اور وفاق بے بس ہیں، کراچی سے پی ٹی آئی کے سولہ ایم این ایز ہیں لیکن کے الیکٹرک کو نکیل دینے میں ناکام ہوگئے ہیں۔

کوئی تبصرے نہیں

تقویت یافتہ بذریعہ Blogger.