بچپن کاانتظار اب جاکر ختم ہوا



 استنبول کی تاریخی مسجد آیا صوفیہ مسجد میں نماز پڑھنے کے بعد  ترک صدرطیب اردوان  نے کہا تاریخی مسجد کھولنےمیں چھیاسی برس لگ گئے۔ زنجیریں توڑکر 'آیاصوفیہ'کوکھولناچاہتےتھے۔ بچپن کاانتظاراب جاکر ختم ہوا۔ 

طیب اردوان نے کہا ساڑھے تین سو افراد  نماز ادا کرنے آئے یہ لوگوں کی اسلام سے محبت کا ثبوت ہے۔  آیا صوفیہ تمام مذاہب کے ماننے والوں کے لیے کھلی رہے گی اور کسی بھی عقیدے کا ماننےوالا ثقافتی ورثے کو دیکھنے آسکتا ہے۔  ترک صدرطیب اردوان نے  سورة فاتحہ اور  سورة بقرہ پڑھی، ان کی آوازنےدل چھولیے ۔

کوئی تبصرے نہیں

تقویت یافتہ بذریعہ Blogger.