محمدبن سلمان کی بہن کو فرانس میں 10 ماہ قید کی سزا



خادم حرمین شریفین شاہ سلمان  کی بیٹی اور ولی عہد محمد بن سلمان کی ہمشیرہ  حسہ  مشکل میں پڑگئیں۔ فرانسیسی عدالت نے مزدور پر تشدد اور تضحیک آمیز رویے پر دس ماہ قید کی معطل سزا اور بھاری جرمانہ  عائد کردیا۔

 خبررساں ادارے اے ایف پی کے مطابق شہزادی حسہ بنت سلمان پر دوہزار سولہ  میں فرانس کے دورے کے دوران ایک پلمبر پر تشدد کے الزام میں مقدمہ زیر سماعت تھا۔حسہ بنت سلمان نے  پیرس کے سیاحتی مقام فوش ایونیو پر واقع لگژری اپارٹمنٹ میں رہائش کے دوران پلمبر اشرف عید کو اپنے واش روم کی تصاویر لینے پر گارڈز رانی سعیدی سے پٹوایا اور مارنے کی دھمکیاں بھی دیں،شہزادی نے تضحیک آمیز رویہ اپناتے ہوئے ورکر کو پاؤں چومنے پر بھی مجبور کیا تھا۔

فرانسیسی عدالت نے  پینتالیس سالہ سعودی شہزادی حسہ پر ان کی غیر موجودگی میں مقدمہ چلایا، وہ کبھی بھی عدالت میں پیش  نہیں ہوئیں، انہیں دس ماہ قید کی معطل سزا کے ساتھ گیارہ  ہزار ڈالر جرمانہ بھی عائد کیا تھا۔سرکاری وکیل نے عدالت سے چھ  ماہ قید اور چار سو اسی  ڈالر جرمانے کی سزا کا مطالبہ کیا تھا تاہم کورٹ نے سعودی شہزادی کو مزید سخت سزا سنائی۔

کوئی تبصرے نہیں

تقویت یافتہ بذریعہ Blogger.