مظفرآباد میں عظیم الشان جلسہ عام، وزیراعظم کا پرجوش خطاب


وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے  نریندر مودی نے کشمیریوں کوچالیس دن سےگھروں میں بند کررکھاہے، کوئی بزدل شخص ہی عورتوں اور بچوں پر ظلم کرسکتا ہے، دلیرانسان عورتوں اور بچوں پرایساظلم نہیں کرسکتا۔ مظفرآباد میں عظیم الشان جلسے سے خطاب   کے دوران وزیراعظم نے بھارتی وزیراعظم نریندر مودی کو مخاطب کرتے ہوئے کہا جنگ ہوگی توآخری دم تک مقابلہ کریں گے،اینٹ کاجواب پتھرسےدیں گے۔

وزیراعظم نے عالمی برادری کو خبردار کیا کہ ہندوستان کے ہٹلرکوروکے ،لوگ لائن آف کنٹرول کی طرف جاناچاہتےہیں، نوجوانوں سے کہتاہوں اس وقت تک سرحد پار نہ کریں جب تک میں نہ کہوں پہلے مجھےاقوام متحدہ جانےدو، کشمیر کا کیس لڑنےدو۔

انہوں نے کہا مودی جومرضی کرلے کشمیری عوام کو شکست نہیں دےسکتا، کشمیریوں میں موت کا خوف ختم ہوچکا ہے، کشمیریوں کا سفیر ہوں، ساری دنیا کو نریندر مودی کی آرایس ایس کے ظلم کی حقیقت بتاؤں گا۔دنیا بھرکےمسلمان کشمیر میں ظلم دیکھ رہے ہیں مگران کےحکمران بھارت سے تجارت کو فوقیت دے رہے ہیں۔

جلسے سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم خارجہ نے مودی کو چیلنج کرتے ہوئے کہا کہ مودی ہمت ہے توکرفیواٹھاؤاورتماشہ دیکھو، عمران خان کشمیریوں کی آواز بن کر مظفرآباد آگئےکیا مودی میں سرینگرمیں جلسہ کرنےکی ہمت ہے؟۔ وزیراعظم آزاد کشمیر راجہ فاروق حیدرنے کہابھارت نے مقبوضہ وادی کوچالیس روزسےدنیا کی سب سےبڑی جیل بنارکھا ہے،نریندر مودی کشمیریوں کےحوصلے پست نہیں کرسکتا۔

عوام نے مقبوضہ کشمیرکے مظلوم عوام سے یک جہتی کا زبردست اظہار کیا۔ مظفرآباد کے تاریخی جلسے میں عوام کا سیلاب امڈ آیا۔ سپراسٹار شاہد آفریدی، شوبز اسٹارجاوید شیخ، ہمایوں سعید گلوکار فاخر،شہزادرائے،مایاعلی،حریم فاروق نے بھی  جلسےمیں شرکت کی  اور شرکا کا لہو گرمایا۔


کوئی تبصرے نہیں

تقویت یافتہ بذریعہ Blogger.