صالحہ کےدو سہاگ مادر وطن پر قربان

 
قوم کی بیٹی کو سلام جس کے دو سہاگ  وطن پر قربان ہوگئے، ضلع مہمند میں جمعرات کو بارودی سرنگ کے دھماکے میں شہید ہونے والے میجرعدیل شاہد نے سوگواروں میں بیوہ اور تین بیٹیاں چھوڑی ہیں ۔  ان کی بیوہ صالحہ کے پہلے شوہر کیپٹن محمد مجاہد آپریشن ضرب عضب میں  شہادت کے رتبے پر فائز ہوئے۔

صالحہ کی تین بیٹیاں ہیں جن میں ایک شہید کیپٹن محمد مجاہدسے  ہے ۔ صبغہ  نے سگے والد کو کبھی نہیں دیکھا وہ کیپٹن مجاہد کی شہادت کے سات ماہ بعد پیدا ہوئی ۔  میجر عدیل شاہد سے شادی کے بعد صالحہ کے ہاں جڑواں بیٹیوں نے جنم لیا۔ میجر عدیل  شاہد نے صالحہ کے پہلے شوہرکی بیٹی اور اپنی جڑواں بیٹیوں میں کبھی فرق نہیں کیا اور صبغہ کو کبھی باپ کی کمی محسوس نہیں ہونے دی۔  صالحہ نے پہلے کیپٹن مجاہد کو مادر وطن پر قربان کیا اور اب دوسرے شوہر  نے بھی جام شہادت نوش کیا۔ اسی طرح ننھی صبغہ نے پہلے اپنے سگے والد کیپٹن محمد مجاہد کو کھویا اور اب پرورش کرنے والےدوسرے والدبھی چلے گئے۔ یوں وہ دو شہیدباپوں کی بیٹی ہوئی۔ 



میجرعدیل شاہداورسپاہی فرازحسین پاک افغان بارڈرپرشہید ہوئے۔  ڈی جی آئی ایس پی آر نے بتایا کہ پاک فوج کے جوان ضلع مہمندمیں پاک افغان بارڈر پر باڑ لگارہےتھے۔ شہید افسر میجر عدیل  شاہد کی  نگرانی میں سرحد پرباڑ  لگائی جارہی تھی۔دونوں شہیدسرحد پار دہشت گردوں کی لگائی گئی آئی ای ڈی کی زدمیں آئے۔پاک افغان بارڈرکےاس علاقےمیں شدید دراندازی کی جاتی رہی۔شہید میجرعدیل شاہد کا تعلق کراچی اورتئیس سال کے شہیدسپاہی فرازحسین کاتعلق کوٹلی آزادکشمیرسےہے۔

کوئی تبصرے نہیں

تقویت یافتہ بذریعہ Blogger.