وفاقی کابینہ کا خصوصی میڈیا ٹریبونلز قائم کرنے کا فیصلہ


Dr Firdous Ashiq Awan briefing newsmen about the decisions taken by the Federal Cabinet in its meeting on Tuesday

وفاقی کابینہ نے ذرائع ابلاغ کے کردار کو آزادانہ، منصفانہ اور شفاف بنانے کے لئے خصوصی میڈیا ٹریبونلز قائم کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

منگل کو اسلام آباد میں وفاقی کابینہ کے اجلاس کے بعد صحافیوں کو بریفنگ دیتے ہوئے اطلاعات و نشریات کے بارے میں وزیراعظم کی معاون خصوصی ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان نے کہا کہ میڈیا ٹریبونلز ذرائع ابلاغ اور دیگر متعلقہ فریقوں سے متعلق مسائل کے حل کیلئے پیمرا کی شکایت کونسل کی جگہ لیں گے۔

معاون خصوصی نے کہا کہ ٹریبونلز نوے دن میں ایک معاملے کا فیصلہ کرینگے اور اس سلسلے میں ایک بل قومی اسمبلی میں پیش کیا جائے گا۔ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان نے کہا کہ اعلیٰ عدلیہ ان ٹریبونلز کی سرپرستی کرے گی۔ انہوں نے کہا کہ پیمرا کے پاس زیرالتواء تمام مقدمات میڈیا ٹریبونلز کو بھیجے جائیں گے۔انہوں نے کہا کہ وزیراعظم عمران خان اور حکومت ذرائع ابلاغ کو سہولت دینے اور انہیں بااختیار بنانے پر یقین رکھتے ہیں۔

معاون خصوصی نے کہا کہ وزیراعظم نے اپنے آئندہ دورہ امریکہ کے بارے میں کابینہ کو اعتماد میں بھی لیا۔انہوں نے کہا کہ وزیراعظم نے اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کے اجلاس میں مسئلہ کشمیر کواجاگر کرنے کیلئے اپنے ایجنڈے اور ترجیحات سمیت عالمی رہنماؤں اور ذرائع ابلاغ کے نمائندوں کے ساتھ ملاقاتوں کے بارے میں کابینہ کو آگاہ کیا۔

ڈاکٹرفردوس عاشق اعوان نے کہا کہ کابینہ نے مسلم لیگ نون کی رہنما مریم نوازکی پارٹی کے نائب صدر کے عہدے کی اہلیت کے بارے میں الیکشن کمیشن آف پاکستان کے حالیہ فیصلے کیخلاف نظرثانی کی درخواست دائر کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ مریم نواز ایک سزایافتہ شخصیت ہیں اور وہ قانون کے تحت سیاسی جماعت کا عہدہ نہیں رکھ سکتیں۔

معاون خصوصی نے کہا کہ کابینہ نے ملک بھر میں خواجہ سراؤں کیلئے صحت کارڈز کی منظوری دی۔انہوں نے کہا کہ پاکستان میں اس طرح کے پانچ ہزار افراد موجود ہیںاورنادرا کی مدد سے ان کے کوائف مرتب کئے جا رہے ہیں۔

کوئی تبصرے نہیں

تقویت یافتہ بذریعہ Blogger.