پاکستان اور بھارت کے درمیان کشمیر پر ایٹمی جنگ کا خدشہ ہے، امریکی تھنک ٹینک



امریکی تھنک ٹینک نے خبردار کیا ہے کہ بھارت اور پاکستان کے درمیان کشیدگی میں اضافہ سے ایٹمی جنگ کا خطرہ منڈلا رہا ہے اور کشمیر کاتنازع اس جنگ کیلئے آگ کی چنگاری ثابت ہوسکتا ہے جس سے جنوب ایشیاء میں ایٹمی جنگ چھڑ سکتی ہے۔

ٹیکساس کے علاقے آسٹن میں قائم جغرافیائی وسیاسی امور کے تھنک ٹینک کی رپورٹ میں کشمیر کو بھارت کا داخلی معاملہ یا بھارت اور پاکستان کے درمیان دوطرفہ تنازع قراردینے پر بھی مختلف رائے کا اظہار کیا گیا ہے۔

رپورٹ کے مطابق بھارتی وزیردفاع راج ناتھ سنگھ کے اس بیان کے بعد ایٹمی جنگ کا خطرہ مزید بڑھ گیا ہے جس میں انہوں نے کہا تھا کہ بھارت ایٹمی ہتھیاروں کے استعمال میں پہل نہ کرنے کی پالیسی ترک کرنے پر غور کررہا ہے۔

رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ کئی دہائیوں پہلے کشمیر کے عوام کو انکا حق استصواب رائے دینے کا وعدہ کیا گیا تھا جو آج تک پورا نہیں کیا گیا۔

امریکی تھنک ٹینک کی رپورٹ میں اس بات کی نشاندہی کی گئی ہےگزشتہ فروری میں پاکستان نے بھارت کا ایک لڑاکا طیارے مار گرایا اور طیارے کے پائلٹ کو واپس بھارت کے حوالے کیا تھا تاہم بھارتی وزیراعظم نریندرمودی نے نہ تو پاکستان کے اس مصالحتی اقدام کو سراہا اور نہ ہی مودی حکومت کشمیر کے معاملے پر بات چیت کیلئے آمادہ ہے جس کے عوام کو اپنے مستقبل کا فیصلہ کرنے کیلئے استصواب رائے کا حق دینے کا وعدہ کیا گیا تھا۔

کوئی تبصرے نہیں

تقویت یافتہ بذریعہ Blogger.