زرتاج گل کی بہن کی تعیناتی پر نیکٹا کی وضاحت



نیشنل کاؤنٹرٹیررزم اتھارٹی نے وزیرمملکت زرتاج گل وزیر کی بہن شبنم گل کی تعیناتی پر وضاحت جاری کردی۔ نیکٹا ترجمان کے مطابق ڈیپوٹیشن کےلیے بارہ وفاقی وصوبائی افسران نےدرخواستیں دیں، جن میں سترہ سے انیس گریڈ کےافسران شامل تھے، موزوں امیدواروں کےانتخاب کے لیے تین کنی کمیٹی قائم کی گئی، کمیٹی نےاسسٹنٹ، ڈپٹی ڈائریکٹرز،ڈائریکٹرزکی پوسٹوں کےچودہ مئی کوانٹرویوکئے،کمیٹی نےبارہ میں سے چھ  امیدواروں کےکیسزاسٹیبلشمنٹ ڈویژن کوبھجوائے۔

ترجمان  نیکٹا کا کہنا ہے کہ منتخب چھ امیدواروں میں شبنم گل کا نام بھی شامل تھا۔ شبنم گل کاانتخاب میرٹ پرہوا، وہ گریڈ انیس میں ڈائریکٹرکےعہدے پرکام کررہی تھیں، شبنم گل پی ایچ ڈی اسکالرہیں،انتہاپسندی اوردہشتگردی پر مقالےلکھ چکی ہیں۔ شبنم گل کونیکٹاکےریسرچ ونگ کےلیےموزوں امیدوارپایاگیا،اسٹیبلشمنٹ ڈویژن نےبائیس مئی کو شبنم گل کی بطور اسسٹنٹ ڈائریکٹر تعیناتی کے آرڈر جاری کیے۔ زرتاج گل کی بہن شبنم گل لاہور کالج برائے خواتین میں اسسٹنٹ پروفیسر ہیں۔ شبنم گل کی تعیناتی پر سوشل میڈیا پر پی ٹی آئی مخالف جماعتوں کے کارکنوں نے شدید تنقید کی تھی۔

1 تبصرہ:

  1. نیشنل کاؤنٹرٹیررزم اتھارٹی نے وزیرمملکت زرتاج گل وزیر کی بہن شبنم گل کی تعیناتی پر وضاحت جاری کردی۔ نیکٹا ترجمان کے مطابق ڈیپوٹیشن کےلیے بارہ وفاقی وصوبائی افسران نےدرخواستیں دیں، جن میں سترہ سے انیس گریڈ کےافسران شامل تھے، موزوں امیدواروں کےانتخاب کے لیے تین کنی کمیٹی قائم کی گئی، کمیٹی نےاسسٹنٹ، ڈپٹی ڈائریکٹرز،ڈائریکٹرزکی پوسٹوں کےچودہ مئی کوانٹرویوکئے،کمیٹی نےبارہ میں سے چھ امیدواروں کےکیسزاسٹیبلشمنٹ ڈویژن کوبھجوائے۔
    ptv news

    جواب دیںحذف کریں

تقویت یافتہ بذریعہ Blogger.