تین دن رہ گئے



سابق وزیراعظم نوازشریف سات مئی کوخود کوجیل حکام کےحوالےکریں گے، لیگی رہنماؤں نے  مشاورتی اجلاس میں اپنے قائد کو بڑے جلوس کے ساتھ جیل پہنچانے کا فیصلہ کرلیا۔ لیگی قائدین نے کارکنان کو باہر لانے کیلئے حکمت عملی بنالی۔

  شاہدخاقان، احسن اقبال اور راناثنا اللہ  نے اجلاس کے بعد میڈیا سے گفتگو میں کہا کہ  نوازشریف کی صحت کے مسائل ہیں، ان کے ساتھ ناانصافی ہوئی ہے لیکن وہ سپریم کورٹ کے حکم پر عمل کریں گے، شاہد خاقان عباسی نے کہا ہے، شہبازشریف اور نوازشریف  کا بیانیہ  یک ہی ہے، شہبازشریف ہی پارٹی صدر ہیں، جلد وطن واپس آئیں گے۔

احسن اقبال کا کہنا تھا حکومت نےپاکستان کو آئی ایم ایف کالونی بنادیا، ملک کی خودمختاری کاسودا کردیاگیا، آئی ایم ایف کے ملازم کو کابینہ میں شامل کیاگیاہے،  آئی ایم ایف کےکہنےپر گورنراسٹیٹ بینک اورچیئرمین ایف بی آرکوہٹایا۔ انہوں نے کہا کہ ن لیگ کے پانچ سال کی ترقی ماضی کے پچیس سال پر بھاری ہے۔ احسن اقبال نے شہبازشریف  کو نوازشریف کی ٹیم کا اوپننگ بیٹسمین قرار دے دیا۔

کوئی تبصرے نہیں

تقویت یافتہ بذریعہ Blogger.