امریکا نے ایران کی فوج پاسدارانِ انقلاب کو دہشت گرد تنظیم قرار دے دیا


Trump labels Iran's army Pasdaran-e-Inquilab as terrorist organization

امریکہ کی جانب سے پڑوسی ملک ایران کی فوج پاسدارانِ انقلاب کو دہشتگرد تنظیم قرار دے دیا گیا۔

وائٹ ہاؤس کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے ایرانی پاسداران انقلاب کو غیر ملکی دہشتگرد تنظیم قرار دے دیا ہے۔ صدر ٹرمپ نے یہ فیصلہ امریکی آئین کے آرٹیکل 219 کے تحت کیا ہے۔

امریکی وزارت خارجہ کے بیان میں کہا گیا ہے کہ ایران سرکاری سطح پر دہشتگردی کو فروغ دے رہا ہے جبکہ اس کی فوج ذاتی اور مالی حیثیت میں دوسرے ممالک میں دہشتگردی کی کارروائیوں میں ملوث ہے۔ ’ پاسداران انقلاب ایرانی حکومت کے دہشتگردی پھیلانے کی مہم کا بنیادی حصہ ہے‘۔

بیان میں وضاحت کی گئی ہے کہ ایسا پہلی بار ہورہا ہے جب امریکہ کی جانب سے کسی دوسرے ملک کی حکومت کو دہشتگرد تنظیم قرار دیا گیا ہو۔ یہ سب اس لیے کیا گیا ہے کیونکہ ایران کے اقدامات دوسری حکومتوں سے بالکل مختلف ہیں۔ اس اقدام کے ذریعے ایران کی حکومت پر دباؤ بڑھانے میں مدد ملے گی۔

امریکی بیان میں کہا گیا ہے  ’ اگر آپ ایرانی پاسداران انقلاب سے کسی قسم کا تعلق رکھتے ہیں یا ان کے ساتھ کوئی کاروبار کر رہے ہیں تو اس کا سیدھا مطلب ہے کہ آپ بھی دہشتگردی کے سپورٹر ہیں‘۔

اس اقدام کے ذریعہ تہران کو یہ واضح پیغام دیا گیا ہے کہ اگر وہ دہشتگردی کو فروغ دے رہا ہے تو اس کے نتائج بھی ہوسکتے ہیں، امریکہ کی جانب سے ایرانی حکومت پر معاشی دباؤ بھی بڑھایا جائے گا اور اس طرح کے اقدامات اس وقت تک کیے جاتے رہیں گے جب تک کہ وہ اپنا رویہ درست نہیں کرلیتا۔

1 تبصرہ:

  1. وائٹ ہاؤس کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے ایرانی پاسداران انقلاب کو غیر ملکی دہشتگرد تنظیم قرار دے دیا ہے۔ صدر ٹرمپ نے یہ فیصلہ امریکی آئین کے آرٹیکل 219 کے تحت کیا ہے۔
    Capital Tv

    جواب دیںحذف کریں

تقویت یافتہ بذریعہ Blogger.