شجاع آباد: مدرسہ کا معلم 3 ماہ تک 13 سالہ بچی کو زیادتی کا نشانہ بناتا رہا


Seminary teacher arrested for raping girl student repeatedly

پنجاب کے شہر شجاع آباد میں دینی مدرسہ کے معلم نے تیرہ سال کی بچی کو  قتل کی دھمکیاں دے کر تین ماہ تک بارہا اپنی ہوس کا نشانہ بناتا رہا۔

میڈیکل رپورٹ میں زیادتی ثابت ہو گئی۔ پولیس نے مقدمہ درج کرکے ملزم کو گرفتار کر لیا ہے۔

واقعہ شجاع آباد کے علاقے نیو ہاؤسنگ کالونی میں پیش آیا۔ متاثرہ بچی کے والدین کے مطابق وہ ذہنی طور پر کمزور ہے اور ٹھیک سے بول بھی نہیں سکتی۔ اسے مدرسے میں دینی تعلیم کیلئے بھیجا لیکن وہ گزشتہ 15 روز سے مدرسے جانے سے انکار کر رہی تھی۔

والدین کے پوچھنے پر بچی نے بتایا کہ مدرسے کا معلم اسے تین ماہ سے زیادتی کا نشانہ بنا رہا ہے اور بھید کھولنے پر جان سے مارنے کی دھمکیاں دے رہا ہے۔

میڈیکل رپورٹ میں بچی سے زیادتی بھی ثابت ہو چکی ہے۔ متاثرہ بچی کے والد نے تھانہ سٹی میں درخواست دی تو پولیس نے کارروائی کرکے ملزم کیخلاف مقدمہ درج کرتے ہوئے اسے گرفتار بھی کر لیا ہے۔

کوئی تبصرے نہیں

تقویت یافتہ بذریعہ Blogger.