آئی ایم ایف معاہدہ عوام دشمن نہیں تو چھپایا کیوں جارہا ہے، پیپلزپارٹی کا سوال


PPP asks PTI govt to disclose agreement with IMF if it's not anti-people

ترجمان چیئرمن پی پی سینیٹر مصطفی نواز کھوکھر نے وفاقی وزیر اطلاعات فواد چوہدری کو جواب دیتے ہوئے کہا ہے کہ سوال گندم جواب چنا، عمران خان حکومت کی پالیسی بن چکی ہے۔

انہوں نے ایک بیان میں کہا کہ حکومت نے آئی ایم ایف کے کہنے پر بدترین مہنگائی کی ہے،  آئی ایم ایف سے معاہدے سے پہلے ہی بجلی، گیس، پٹرول, ادویات بار بار مہنگے کئے گئے، اپوزیشن پر الزام لگا کر حکومت جان نہیں چھڑا سکتی ۔

نواز کھوکھر نے کہا حکومت کو آئی ایم ایف کا معاہدہ اور شرائط قوم کے سامنے لانا ہوں گی، فواد چودھری بتائیں کہ معاہدہ عوام دشمن نہیں تو چھپایا کیوں جا رہا ہے،  بدترین مہنگائی کا اگلا  مرحلہ بھی آنے والا ہے حکومت تیاری کر چکی ہے، گرمیاں شروع ہوتے ہی لوڈشیڈنگ کے ساتھ بجلی مزید مہنگی کی جا رہی ہے، دیہی علاقوں میں تو بجلی کی بدترین لوڈشیڈنگ شروع کر دی گئی ہے۔

انہوں نے کہا غلط بیانی اور جھوٹے وعدے عمران خان حکومت کا وتیرہ بن چکا ہے،  ایک وزیر کا بیان دوسرے وزیر سے متضاد اور  وزیراعظم کی باتیں سب سے متضاد ہوتی ہیں۔

ترجمان بلاول بھٹو زرداری نے کہا وزیر خزانہ کہتے ہیں کہ معاشی  حالات ڈیڑھ سال تک خراب رہیں گے، ایک وزیر فرماتے ہیں کہ 10 دن میں خوشحالی آنے والی ہے، ہم سوال کرتے ہیں تو  وزیراطلاعات الزامات لگانا شروع ہو جاتے ہیں۔

انہوں نے کہا حکومت 22 کروڑ عوام کے مستقبل کے ساتھ کھیل رہی ہے، ہم ان کو قوم کے مستقبل کے ساتھ کھیلنے نہیں دیں گے، ان نااہل حکمرانوں کا ہر محاذ پر گھیراؤ کریں گے، ہمیں پارٹی میں احتساب کا درس دینے والے پہلے پرویز خٹک اور جہانگیر ترین کا تو احتساب کریں۔

کوئی تبصرے نہیں

تقویت یافتہ بذریعہ Blogger.