میاں صاحب نظریاتی ہوگئے


پیپلزپارٹی کےچیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے پیر کو کوٹ لکھپت جیل میں قید مسلم لیگ ن کے قائد میاں نوازشریف سے ملاقات کی اور ان کی عیادت کی۔ اس ملاقات میں بلاول بھٹو کا کہنا تھا کہ آپ تین بار وزیراعظم رہے ہیں آپ کو زیادہ دیربند نہیں رکھا جاسکتا، آپ سے اگلی ملاقات جلد جیل سےباہر ہوگی۔ پی پی چیئرمین نے نوازشریف کو پیش کش کی کہ اگر وہ چاہیں تو ان کا علاج  این آئی سی وی ڈی میں کرایاجائے گا، جس پر میاں نوازشریف نے کہا کہ اگر یہ اجازت دیں تو علاج وہ خود بھی کراسکتے ہیں، حکمران ان کا علاج کرائیں تماشا تو نہ بنائیں۔ 

ملاقات کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ میاں صاحب اب نظریاتی ہوگئے ہیں،وہ  سمجھوتہ کرنے  پرتیار نہیں ہوں گے،  این آر او کی باتیں کرنےوالےمیاں صاحب کیخلاف سازش کررہےہیں تین مرتبہ کے وزیر اعظم کو جیل میں دیکھ کر دکھ ہوا ۔میاں صاحب بہت بیمارلگ رہےتھے،دل کے مریض پرعلاج کےنام پردباؤڈالناتشدد ہے۔

مریم نواز نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ  ٹوئیٹر پر بلاول بھٹو زرداری کا شکریہ ادا  کیا۔ ان کا کہنا تھا کہ بلاول بھٹو زرداری آپ کی فکر مندی اورشائستہ طرز عمل کا شکریہ، دعائیں اور نیک خواہش یہ میرے لیے بہت اہم ہے،سلامتی ہو۔  وفاقی وزیر اطلاعات فواد چوہدری نے نوازشریف سے بلاول بھٹو کی ملاقات پر تبصرہ کرتے ہوئے ٹویٹ کیا کہ  ذوالفقار علی بھٹو کے نواسے نے ضیا الحق کے منہ بولے بیٹے سےملاقات ک کرکے اس صدی کا سب سے بڑا یوٹرن لیا۔



1 تبصرہ:

تقویت یافتہ بذریعہ Blogger.